30

وزیراعظم عمران خان کی سیاحت سےمتعلق معاملات کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کی ہدایت

وزیراعظم عمران خان کی سیاحت سےمتعلق معاملات کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کی …

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن ) وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت نیشنل کوراڈینیشن کمیٹی برائے سیاحت کا اجلاس ہوا جس میں گورنمنٹ ریسٹ ہاو¿سز اور گورنر ہاو¿سز کو عوام کے لئے دستیاب کرنے کے حوالے سے پیش رفت پر بریفنگ دی گئی ہے۔وزیراعظم نے ہدایت کی کہ سیاحت کے حوالے سے زیر التوا معاملات کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے۔

وزیرا عظم ہاﺅس کی جانب سے جاری اعلامیہ میں بتایا گیا کہ ا جلاس کو مختلف سیاحتی مقامات کے لئے ڈیسٹی نیشن منیجمنٹ پلان کی تیاری کے حوالے سے اب تک کی پیش رفت پر بھی بریفنگ دی گئی اور بتایا گیا کہ سیاحت کے فروغ کے لئے چاروں صوبوں میں سنٹرلائزڈ ٹورازم ویب سائٹ مکمل طور پر فعال ہے۔

اعلامیہ کے مطابق وزیر اعظم کو اٹک اور بالا حصار قلعے کو سیاحتی مراکز بنانے کے حوالے سے پیش رفت پر بھی بریفنگ دی گئی اور بتایا گیا کہ سیاحتی مقامات پر ائیر سفاری سروس کے اجراءکے لئے سول ایوی ایشن کی جانب سے اپنے قواعد میں ترمیم کی جا چکی ہے، نتیجتاً نجی شعبے کے لئے بے شمار مواقع پیدا ہو چکے ہیں۔

وزیر اعظم عمران خان نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں سیاحت کا بے شمار پوٹینشل موجود ہے۔ضرورت اس امر کی ہے کہ اس پوٹیشنل کو مکمل طور پر بروے کار لایا جائے اور سیاحتی مقامات پر بین الاقوامی معیار کی سہولتوں کو یقینی بنایا جائے۔

وزیر اعظم نے جہلم اور اس کے اطراف میں واقع ریسٹ ہاوسز و دیگر تاریخی مقامات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ان عمارات کی بحالی کے لئے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ ماڈل کو بروے کار لایا جائے۔

عمران خان نے متعلقہ محکموں کو ہدایت کی کہ سیاحتی مقامات پر ٹورسٹ ریزاٹ اور بین الاقوامی معیار کے ہوٹل قائم کرنے والوں کے لئے حکومت کی جانب سے سہولیات بشمول ٹیکس میں چھوٹ پر مبنی تجاویز پیش کی جائیں تاکہ ان کو جلد از جلد حتمی شکل دی جا سکے۔

مزید :

اہم خبریںقومی





Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں